2035

جھگڑالو عورت قسط3

اب وہ  بھی  میری " ٹرک " کی کاپی کرتے ہوۓ اپنا پاؤں سرکاتے سرکاتے میرے لن کے قریب  لے آئیں تھیں  ۔۔ مجھے اس کھیل میں بڑا مزہ آ رہا تھا ۔۔۔ کہ بظاہر تو ہم ایک دوسرے کے ساتھ باتیں کر رہے تھے پر اندر کھاتے ہم ایک دوسرے کے ساتھ سخت چھیڑ چھاڑ کر رہے تھے ۔۔۔۔۔۔  اور میرا خیال ہے اب وہ بھی  میری طرح  اس صورت حال کا بوری طرح لُطف لے  رہی تھی ۔۔۔۔ کیونکہ اب ان کا چہرہ گل  گلنار تو پہلے کی طرح ہی  تھا پر اب وہ    نیچے نہیں دیکھ رہی تھی ۔۔۔۔ بلکہ میری آنکھوں آنکھیں ڈال کر باتیں کر رہی تھی۔۔
۔
 ہاں تو میں کہہ رہا تھا کہ جیسے ہی اس نے اپنا پاؤں نیچے کر کے میری تھائ   پر رکھا توں ہی میں نے اپنے آپ کو تھوڑا ایڈجسٹ کیا ۔۔ اور تھوڑا کسمایا اور اب ان کا  پاؤں عین میرے لن پر تھا ادھر      اسی رولے گولے  میں  ، میں بھی  اپنا پاؤں ان کی چوت کے اوپر لے جانے میں کامیاب ہو گیا تھا ۔۔۔۔ اب میں نے اپنے  چوتڑ کو تھوڑا سا اٹھا کر ادھر ادھر کیا اور اب آنٹی کا پاؤں میرے لن عین پاس  تھا۔۔ پھر  میں خود ہی تھوڑا سا ہلہ۔۔۔ کسمسایا ۔۔۔۔ جس سے آنٹی کے پاؤں  نے میرے لن کو چُھو لیا ۔۔۔۔۔۔۔۔ اور اس دوران میرا انگھوٹھا بھی ان کی چوت کو چُھو چکا تھا اور جیسے ہی میرے انگھوٹھے ان چوت کو۔۔۔ شلوار کے اوپر سے  چھوا تو۔۔۔۔۔ ان کی شلوار چوت والی  جگہ سے  بری طرح  بھیگی ہوئ تھی ۔۔۔ اور انگھوٹھے کو  چوت کی گرمی شلوار کے اوپر سے ہی   محسوس  ہو رہی تھی  ۔ ۔۔۔ اب صورت حال یہ ہو چکی تھی کہ جوش کے مارے میرا بُرا حال تھا اور میں لمحہ نہ لمحہ خود پر کنٹرول کھو رہا تھا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور میرے حواس میرے قابو سے باہر ہوتے جا رہے تھے ۔۔۔
اور پھر میں نے ایک بے خودی کے عالم میں ان کا پاؤں پکڑا اور لن پر رگڑ دیا ۔۔۔ وہ کھچہ نہ بولی بس۔۔۔ تھوڑا سا کراہی ۔۔۔۔ اُ ف ف ف ف۔۔۔۔۔ اب میں نے زیادہ نہ سوچا اور ویسے بھی سوچنے کی اب ضرورت بھی نہ تھی میں اُٹھا ۔۔۔ اور ان کے چہرے کو اپنے دونوں ہاتھوں میں پکڑ لیا ۔۔۔ اور پھر ان کے ایکھ  گال کو چوم لیا۔۔۔۔۔۔ اب مجھے ان کی آواز سُنائ دی وہ کہہ رہی تھی ۔۔۔ کیا کر رہے ہو ۔۔۔؟ تو میں نے جواب دیا آپ کے گال کو چوم رہا ہوں تو وہ کہنے لگی ۔۔۔ یہ  یہ  ٹھیک نہیں ہے ۔۔۔۔۔ تمھاری گرل فرینڈ کیا سوچے گی ؟؟۔۔۔ تو میں نے کہا گرل فرنیڈ کو کچھ پتہ چلے گا تو وہ کچھ سوچے گی نہ ۔۔۔ تو وہ سرگوشی کی سی آواز میں بولی ۔۔۔۔  پھر بھی یہ ٹھیک نہیں ہے ۔۔۔ میں ۔۔۔ میں ۔۔ تمھاری آنٹی ہوں اور تم سے بہت بڑی بھی ہوں ۔۔۔۔۔ تم اپنی گرل فرنیڈ کے ساتھ یہ سب کرو  ۔۔۔ اور مجھے چھوڑ دو پلیز۔۔۔!!!! ۔۔۔۔۔۔۔ تو میں نے صریحاً جھوٹ بولتے ہوۓ جواب دیا کہ آنٹی وہ مجھے یہ سب نہیں کرنے دیتی ۔۔ تو وہ تھوڑا حیران ہو کر کہنے لگی ۔۔۔ اچھا ۔۔۔۔۔ پر وہ کیوں ؟ تو میں نے ایک اور جھوٹ بوتے ہوۓ کہا کہ ۔۔۔۔۔ وہ کہتی ہے یہ سب شادی کے بعد کریں گے ۔۔۔۔۔۔  تو وہ کہنے لگی بات تو وہ ٹھیک کہہ رہی ہے نا ۔۔۔۔۔ تو میں نے جواب دیا وہ ٹھیک تو کہہ رہی ہے پر ۔۔۔ ہیں اس کا کیا کروں اور ساتھ ہی انڈروئیر سے لن باہر نکال کر ان کے سامنے کر دیا ۔۔۔۔۔
 
لن کو چور نظروں سے تو وہ شروع سے ہی دیکھتی آ رہی تھی ۔۔۔ پر اب جب میرا موٹا لمبا ۔۔۔۔اور سانڈ نما لن ننگم ننگا ان کی آنکھوں کے سامنے آیا تو وہ گھبرا گئ اور بولی ۔۔۔ ارے ارے ۔۔۔ یہ کیا کر رہے ہو ۔۔ کچھ شرم بھی ہے تم میں کہ نہیں ؟؟ پر میں نے ان کی کوئ بات نہ سنی اور ان کا ہاتھ پکڑ کر اپنے لن پر رکھ دیا اور خود ان کے منہ پر جھک کیا اور ان کے گالوں کو  چومنے لگا جو اُس ٹائم شرم سے لال ہو رہے تھے  ۔۔۔۔۔۔۔۔ اپنے گالوں کو چومتے ہوۓ دیکھ کر وہ کہنے لگی ۔۔۔ نہیں کرو ۔۔ پلیز ز ز زز  ززز  ۔ز ۔ز۔ز۔زز۔زز۔۔۔۔  پر میں ان کی کہاں سننے والا تھا ۔۔ سو میں اپنے کام میں لگا رہا ۔۔۔۔
اب میری زبان اُن کے منہ پر اپنے کرتب دکھا رہی تھی ۔۔ اور ان کے لال گلابی ہونے والے منہ کے ایک ایک انچ کو چاٹ رہی تھی ۔۔۔ اس کے ساتھ ہی ان   کے منہ سے دبی دبی سسکیوں کی آوازیں بھی آ نے لگیں تھیں ۔۔۔۔۔ اس طرح میں نے اپنی زبان سے ان کے سارے چہرے کو  گیلا کر دیا تھا ۔۔۔۔۔  پھر میری زبان ان کے ہونٹوں کی طرف بڑھی اور میں نے اپنی زبان کی نوک بنائ اور اُن کے ہونٹوں کو چاٹنے لگا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اُف ۔ف۔ف۔ف۔ف۔ ان کے ہونٹ اتنے نرم تھے کہ جیسے پنکھڑی کوئ گلاب کی سی ہو ۔۔۔۔ جی کر رہا تھا کہ بس ان کو ہی چاٹتا جاؤں ۔۔۔۔ چاٹتا جاؤں ۔۔۔۔۔ اور مجھے ایسا لگ رہا  تھا کہ ان ہونٹوں سے رس ٹپک رہا ہو اور میں وہ رس جی بھر کر پینا چاہتا تھا ۔۔ سو میں ان کے ہونٹوں کا رس پیتا رہا پیتا رہا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔   میرے ہونٹ ان کے ہونٹوں کے ساتھ سختی سے جُڑے ہوۓ تھے اور کمرے میں پوچ ۔۔۔ پووو چ چ چ۔۔۔ پوچ ۔۔ چ چ چ کی کسسنگ کی مخصوص آوازیں گونج رہی تھیں ۔۔۔ کچھ دیر بعد انہوں نے بھی تھوڑا تھوڑا رسپانس دینا شروع کر دیا اور ۔۔۔۔ میرے لن پر دھرا ہوا ان کا ہاتھ حرکت میں آیا اور ۔۔۔۔ انہوں نے اپنی مُٹھی میں میرے  لن کو گرپ کر لیا ۔۔۔۔۔۔ اور پھر اسے ہولے ہولے دبانے لگی ۔۔۔۔۔۔     ادھر میں بڑے جوش سے ان کے رس بھرے ہونٹ چوس رہا تھا کہ اچانک آنٹی نے اپنی زبان سے میرے دانتوں کو برش کرنا شروع کر دیا ۔۔۔۔۔۔۔  ہوں ۔۔۔۔۔اب آنٹی شرمانا چھوڑ کر  بوری طرح چارج ہو گئ لگتی تھی ۔۔۔ سو میں نے فوراً ہی اپنا منہ تھوڑا کھول دیا اور اور انہوں نے جھٹ سے اپنی زبان میرے منہ میں ڈال دی  اور میں ان کی زبان کو چوسنے لگا ۔۔۔۔ اُف ف ف ف ۔۔۔۔ان کی ان کی زبان تو ان کے ہونٹوں سے بھی زیادہ ٹیسٹی تھی ۔۔۔۔ ہم دونوں ہی پوری طرح سے مست ہو چکے تھے ۔۔۔۔  ہونٹ اور ایک ودسرے کی زبانیں چوسنے سے  ہم دونوں کے پیچ  پہلے سے لگی شہوانی آگ  اب  کچھ اور تیزی سے بڑھتی جا رہی تھی    کچھ دیر کسنگ کرنے کے بعد وہ مجھ سے الگ ہو گئ ۔۔۔ اور کہنے لگی اس کام میں مجھے  تم کافی  ٹرینڈ لگتے ہو ۔۔۔۔ تو میں نے کہا یس س س ۔۔۔۔  اور کہا آنٹی جی میں فکنگ سپیسلسٹ بھی  ہوں تو وہ ہنس کر بولی ۔۔۔۔ لگ رہے ہو بابا لگ رہے ہو۔۔۔۔۔ پھر کہنے لگی تمھاری  کسنگ  کی خاص کر تعریف نہ کرنا زیادتی ہو گی ۔۔۔۔۔۔ پھر وہ بولی رہی فکنکگ کی بات تو ابھی دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جاۓ گا یہ کہا اور اپنی باہیں پھیلا کر میری طرف بڑہی اور مجھے اپنے گلے سے لگا لیا اور اس دفعہ ہم نے کسنگ نہیں کی بلکہ زبانیں باہر نکال کر ان کو آپس میں لڑانے لگے ۔۔۔۔۔۔۔

روم میں جا کر وہ سیدھا بیڈ پر لیٹ گئ اور سیکسی پوز بنا کر بولی میرا جسم کیسا ہے ؟ تو میں نے کہا بہت خوبصورت بہت سیکسی  ۔۔۔۔ پھر اس نے اپنے دونوں مموں کو اپنے ہاتھوں میں پکڑا اور کہنے  لگی ۔۔۔ اور یہ بتاؤ تم کو میرے بریسٹ کیسے لگے ؟  لگتا ہی نہیں تھا کہ یہ وہ ہی خاتون ہے جس سے سارا محلہ ناک ناک آیا ہوا تھا ۔۔۔۔ اور محلے کی ہر عورت اس لیڈی سے پناہ مانگتی تھی ۔۔۔۔ اس وقت تو ایسا لگ رہا تھا کہ وہ ایک سیکسی لیڈی ہے ۔۔۔ اور جواس وقت  سیکس کے نشے میں ٹُن ہے ۔۔۔ ہا ں تو میں کہہ رہا تھا کہ اس نے اپنے دونوں ہاتھو ں میں اپنے ممے پکڑے ہوۓ تھے اور مجھ سے پوچھ رہی تھی کہ بتاؤ نہ میرے ممے کیسے ہیں ؟ اب میں بیڈ پر ان کے پاس جا کر بیٹھ گیا اور ان کا ایک مما اپنے منہ لیا اور اسے چوس کر  بولا ۔۔۔۔۔۔ بڑے ہی ٹیسٹی اور بڑے شاندار ہیں آپ کے ممے ۔۔۔۔ یہ سُن کر انہوں نے مجھے بالوں سے پکڑا اور میرا سر اپنی پھدی پر لے گئ اور بولی ۔۔۔ اب بتاؤ بتاؤ یہ کیسی ہے ،،؟؟ ۔۔ اور اسکے ساتھ ہی  میرا منہ اپنے پھدی پر زبردستی رگڑنے لگی ۔۔۔۔ جیسے ہی وہ میرا منہ اپنے پھدی پر لے گئ میں نے فوراً ہی اپنی ناک ان کی چوت سے لگا دی ۔۔ با لوں کی وجہ سے ان کی چوت سے بڑی ہی مست مہک نکل رہی تھی ۔۔۔ اور میں ان کی چوت کی یہ سیکسی مہک انہیل کر رہا تھا ۔۔۔۔ ان کی چوت سونگھتے ہوۓ  جب کافی دیر ہو گئ تو وہ تھوڑا حیران ہو کر بولی ۔۔۔ کیا کر رہے ہو ۔۔۔ میری چوت چاٹو ناں ۔۔۔۔ مجھے ابھی تک چوت پر تمھاری زبان نہیں محسوس ہو رہی ۔۔۔ تو میں نے کہا آنٹی آپ کی چوت کی مہک لے رہا ہوں تو وہ حیران ہو کر بولی ۔۔۔ میری چوت کی مہک ؟ تو میں نے جواب دیا یس آنٹی آپ کی چوت کی مہک ۔۔۔تو وہ بولی کیسی لگی یہ مہک ۔۔تو میں بولا ۔۔۔۔۔۔ مت پوچھو میری جان ایسا لگ رہا ہے کہ جیسے میں نے پوری بوتل چڑھائ ہو ۔۔
تو وہ بولی اوکے اوکے اب چوت سونگھنا چھوڑو اور میرے نپل چوسو ۔۔ اور میں نے ان کی چوت سے منہ ہٹایا اور اور نپل کو منہ میں لے لیا  اور اسے چوسنے لگا ۔۔۔ آنٹی کافی گرم ہو چکی تھی ۔۔سو نپل میں لیتے ہی سسکنے لگی ۔۔۔ سسسس۔۔س۔س۔سس۔۔ ممم ۔۔۔ اور پھر کچھ دیر تک وہ باری باری اپنے مممے چسواتی رہی بھر اس کے بعد وہ اُلٹی لیٹ گئ اور بولی  ۔۔۔ اپنی زبان سے میری ساری باڈی کو مساج کرو ۔۔۔ یہ سن کر میں نے اپنی زبان ان کے کندھے پر رکھی اور  آہستہ آہستہ نیچے کی طرف آنے لگا میری ٹنگ مساج کو آنٹی بہت انجواۓ کر رہی تھی ۔۔ اور کراہنے کے ساتھ ساتھ کہنے لگی ۔۔۔ ہاں ہاں ۔۔۔یہاں پوری زبان کا مساج کرو ۔۔۔ یس۔۔۔ چاٹ میری سیکسی باڈی کو تو بھی کیا یاد کرے گا کہ کیسی سیکسی باڈی ملی تھی چاٹنے کو ۔۔۔ آنتی کی سسکیاں ان کے سیکسی ڈائیلاگ ۔۔۔اُف مجھے پاگل کر رہے تھے ۔۔۔   سو میں نے تیزی کے ساتھ ان کی باڈی  کو چاٹنا شروع کر دیا ۔۔
 
جب میری زبان ان کی گانڈ پر پہنچی تو انہوں نے میری زبان کو وہاں  فیل کر کے اپنی  گانڈ تھوڑی سی  اُٹھا ئ  اور بولی ۔۔۔ ۔ میری جان اس کو بھی چاٹے بغیر نہیں چوڑنا ۔۔اسی اثنا میں  میری زبان ان کی گانڈ پر پہنچ چکی تھی ۔۔۔۔ اور وہ اتنی نرم ۔۔ اتنی مولائم اتنی مست اور اتنی زبردست تھی کہ ۔۔ یقین کرو دوستو میں تو حیران ہی رہ گیا ۔۔  جب میں نے اپنی زبان ان کی گانڈ پر رکھی تو اب انہوں نے اپنی گانڈ کو بلکل اُوپر اُٹھا دیا ۔۔ اُف اُف ۔۔۔۔ کیا نظارہ تھا ۔۔ گوری گانڈ پر چھوٹا سا سوراخ اور سوراخ  کے آس پاس لکیریں بڑی ہی  واضع اور کلئیر نظر آ رہی تھی  ۔۔۔ اتنی واضع کہ میں ان کو گن بھی سکتا تھا اور حیرت کی بات یہ تھی کہ ان کی چوت کی نسبت ان کی گانڈ پر کوئ بھی  بال نظر  نہ آ رہا  تھا گانڈ کو دیکھتے ہوۓ میں سوچ رہا تھا کہ اس میں میرا موٹا لن کیسے جاۓ گا ؟ اور پھر بے یختیار میری درمیانی انگلی ان کی گانڈ کے سوراخ پر چلی گئ ۔۔۔۔۔ اور قبل یس کہ کہ میں یہ  انگلی ان کی گانڈ کے  اندر داخل کرتا وہ فوراً بولی ۔۔۔ جان !!۔۔ میری گانڈ مکھن کی طرح نرم ہے  اپنی انگلی کو تھوڑا گیلا کر لوگے ۔۔ تو تمھاری انگلی بڑے ہی  آرام سے میری گانڈ میں چلی جاۓ گی  ۔۔  
اب میں نے اپنی انگلی گیلی کرنے کے لیۓ ان کے منہ کے آگے جیسے ہی اپنی انگلی  کی تو وہ میری طرف دیکھ کر بولی ۔۔۔ میرا تھوک میری ہی گانڈ پے لگانا چاہتے ہو ۔۔ تو میں نے کہا جی آنٹی جی گانڈ بھی آپ کی تھوک بھی آپ کا ۔۔۔ تب انہوں نے میری پوری انگلی اپنے منہ میں لے لی اور اسے پہلے تو لن کی طرح چوسا پھر انگلی پر زبان چلائ اور پھر منہ میں انگلی  ڈالے ڈالے  بہت سا تھوک اس پر مل دیا ۔۔۔۔ اور بولی اب تم بھی تھوڑا سا تھوک لگا کر  میری گانڈ کے سوراخ کو گیلا کر لو اور میں نے اپنی زبان ان کے ہول پر رکھی اور کافی دیر تک ان کا سوراخ چاٹتا رہا بھر وہ بولی اب چاٹنا بس کر اور ۔۔۔ ڈال میری گانڈ میں اپنی انگلی ڈال دے ۔۔۔  ۔۔۔ اب میں نے انگلی پر تھوڑا اور تھوک لگایا اور ان کی موری پر رکھ کر انگلی کو ہلکہ سا دبایا۔۔۔۔۔۔  ۔۔۔۔ انگلی بنا روکاوٹ کے ان کے گیلے سوراخ میں اترتی چلی گئ ۔۔۔ ایسے لگ رہا تھا کہ جیسے میری انگلی مکھن میں جا رہی ہے ۔۔ جیسے ہی ساری انگلی ان کی گانڈ میں چلی گئ انہوں نے  ایک مست سی آہ بھرہ اور  سر میری طرف موڑ  کر بولی۔۔ ۔۔۔ کیوں میں ٹھیک نہ کہتی تھی کہ میری گانڈ  نہیں مکھن ہے ؟ اب یقین آ گیا ہے نہ ۔۔۔  میں نے کوئ جواب نہ دیا اور انگلی اندر باہر کرتا رہا اور پھر کھچ دیر بعد دو انگلیاں ان کی گانڈ میں ڈال دیں  ۔۔۔ اس کے ساتھ ہی آنٹی بھی مستی کے عالم  میں اپنی گانڈ کو  ٹوئسٹ  کرنے لگی ۔۔

 سو میں نے جونہی آنٹی کی ٹاننگیں اُٹھائیں تو وہ چونک بولی کیا کرنے لگے ہو؟ تو میں نے کہا آنٹی میں لن آپ کی چوت میں ڈالنے لگا ہوں تو وہ کہنے لگی ۔۔زرا ٹھہرو۔۔ !!  میری جان کہ ابھی عشق کے امتحاں اور بھی ہیں ۔۔۔۔ اور فوراً بستر   سے اُٹھ کھڑی ہوئ پھر مجھ سے کہنے لگی ۔۔ تھینک یو ڈارلنگ تم بہت اچھے اور سیکسی  ہو ۔۔۔۔ اور تم کسی بھی خاتون کو مست کر سکتے ہو پھر بولی ۔۔۔ بستر سے نیچے اُتر کر کھڑے ہو جاؤ !!!۔۔ اور و ہ خود جلدی سے پلنگ کی کونے پر بیٹھ  گئ پھر انہوں نے میرا لن اپنے ہاتھ میں پکڑ لیا اور اور اسے بڑے پیار سے سہلانے لگی اور پھر بولی ۔۔۔ بڑا جاندار لن ہے تمھارا ۔۔۔ اور پھر لن کو نیچے  کی طرف کس کرنے لگی ۔۔۔ کس کرتے کرتے جب اس کے ہونٹ میرے ٹوپے تک پہنچے۔۔ تو عین اسی وقت میرے لن سے ایک موٹا سا مزی کا قطرہ  نکلا ۔۔۔ انہوں نے ایک نظر میری طرف دیکھا اور پھر انپی زبان ٹوپے کے نیچے رکھ دی ا ور پھر وہ قطرہ اپنے منہ میں لے گئ ۔۔۔۔۔ پھر اہنوں نے میرے ٹوپے کو اپنے ہونٹوں میں دبایا اور منہ کے اندر ہی زبان سے اسے چاٹنے لگی ۔۔۔ پھر آہستہ آہستہ سارے لن کو اپنے منہ کے اندر کرنے لگییں   ۔۔۔۔۔۔۔ 

ان کے لن چوسنے سے میں مست ہو گیا خاص کر ان کا گیلا منہ ۔۔۔ مست زبان اور نرم ہونٹ۔۔۔  لن کو اور زیادہ ۔۔۔ اکڑا رہے تھے ۔۔۔۔۔ اور میں بے اختیار سسکیاں بھرنے لگا ۔۔۔ میری آوازیں سُن کر انہوں نے لن کو اپنے منہ سے نکالا اور کہنے لگی ۔ابھی کہان جان  جی ابھی تو میں نے تم کو اور بھی تڑپانا ہے ایسے ہی جیسے تم نے مجھ کو تڑپایا تھا ۔۔ پھر سر گوشی نما آواز میں بولی میں تم کو اتنا مزہ دوں گی کہ آج تک کسی بھی لڑکی نے نہیں دیا ہو گا ۔۔ اور لن کو پھر سے اپنے منہ میں ڈال لیا اور اسے مزے لے کر چوسنے لگی ۔۔۔۔۔۔ پھر کچھ دیر بعد انہوں نے اپنی زبان کی نوک بنائ اور سارے لن پر پھیرنے لگی اور میرے منہ سے س۔۔سسسس۔۔۔۔ آہ۔ ہ۔ ہ۔ اُف ف ففف جیسی آوازیں نکلنا شروع ہو گیئں جسے سُن کر وہ مزید جوش میں آ گیئں ۔۔۔۔ کیا بتاؤن دوستو ۔۔۔ کہ پتلی سی لمبی سی رس بھر زبان کی نوک سے لنڈ کو چاٹنے کا کتنا مزہ آتا ہے ۔۔۔

ان کے اس طرح لن چوسنے/چاٹنے سے میرا لن اور بھی تن گیا اور میں فُل جوش میں آ گیا اور لن ان  کی گیلی چوت میں جانے کو بے تاب ہو گیا ۔۔۔ اور اس سے پہلے کہ میں ان سے کچھ کہتا وہ خود ہی  کہنے لگی ۔۔۔ بڑے بے چین نظر آ رہے ہو۔۔۔۔ ابھی تو میں نے  بس تھوڑا سا ہی لن چوسا ہے۔۔ تمہارے بالز اور سارا بدن ابھی باقی ہے ۔۔۔۔ پھر بولی کیا یاد کرو گے کہ کس سیکسی عورت سے پالا پڑا تھا ۔۔۔ یہ کہا اور میرے بالز اپنے منہ میں لے لیۓ اور ان پر زبان پھیرنے لگی ۔۔۔۔۔ کافی دیر تک وہ میرے بالز چاٹتی اور لن چوستی رہی ۔۔۔۔ اوراس کے ساتھ ساتھ سارے بدن پر ہاتھ بھی پھیرتی رہی ۔۔ اور میں ۔۔۔ ظاہر ہے ان کے ایک ایک ایکشن کا مزہ لے رہا تھا ۔۔۔۔۔ اور اب میرا جی چاہ رہا تھا کہ میں جلدی سے اپنا لن ان کی چوت میں دال ڈوں ۔۔۔ پر وہ ابھی چوت مروانے کے مُوڈ میں نہیں نظر آرہی تھی ۔۔۔۔  پھر میں نے ان کی چھاتیوں کو پکڑ لیا اور ان کے موٹے موٹے نپلز کو اپنی دونوں انگلیوں میں لے کر مسلنے لگا۔۔۔ اور جب بھی میں ان کے نپلز زور سے دباتا وہ ۔۔۔ ایک مست آواز میں کراہتی اور تیزی سے لن کو منہ میں ان آؤٹ کرنے لگتی تھی ۔۔۔

پھر میں نے   تھوڑے اور زور سے ان کے نپلز دبانہ شروع کر دیۓ ۔۔۔۔ اور وہ مزہ سے ہانپنے لگی میرا خیال تھا کہ اب ان کی بھی چوت لن مانگنے لگی تھی ۔۔۔۔ اور میرا اندازہ ٹھیک ہی نکلا ۔۔۔ اور جب  میں ان کا ایک نپل زرا زور سے موروڑا ۔۔۔۔ تو ان کی بس ہو گئ ۔۔۔ اب انہوں نے لن منہ سے نکالا اور پلنگ پرجا کر لیٹ گئ اور اپنی ٹانگیں اٹھا کر  بولی ۔۔۔ مجھے چودو مجھے چودو ۔۔۔۔  یہ سن کر میرا دل باغ باغ ہو گیا ۔۔۔۔۔۔۔ اور میں نے جمپ لگائ اور پلنگ پر آ گیا یہ دیکھتے ہی انہوں نے اپنی دونوں ٹانگیں اوپر اُٹھا لیں جن کو میں فور اً ہی اپنے کاندھے پر رکھ لیا  اور لن کو ان کی چوت پر ایڈجسٹ کر لیا گو کہ ان کی چوت کافی گیلی تھی پر پھر بھی میں نے اپنے ٹوپے کو تُھوک سے تر کیا اور ۔۔۔۔ اور ٹوپا ان کی گیلی پھدی کی موری پر رکھ کر جونہی دھکا مارنے لگا تو وہ بولی ایک منٹ رکو پلیز ۔!!! اور میں نے دھکا مارنا موقوف کر دیا اور سوالیہ نٖظروں سے ان کی طرف دیکھنے لگا ۔۔۔۔ تو وہ کہنے لگی ۔۔۔ دیکھو  ۔۔ تم اپنا لن میرے اندر تو کرنے لگے ہو ۔۔۔۔ پر پلیز ۔۔۔ تھوڑا ٹائم لگانا ۔۔۔۔۔ تو میں نے پوچھا وہ کیوں  آنٹی جی تو وہ بولی ۔۔۔۔   بڑے دنوں بعد کوئ لن میری چوت میں جا رہا ہے  پلیز فوراً ہی نا چھوٹ جانا ۔۔۔۔۔ ان کی بات سُن کر میں تھوڑا سا مسکُرایا اور بولا ۔۔۔۔۔ کہ آنٹی  آپ اس بات کی   آپ چنتا   نہ کریں ۔۔۔ میں آپ کو چودائ کا پورا مزہ دوں گا اور تب تک آپ نہ کہیں گی میں نہیں چھوٹوں گا ۔۔۔ آپ زرا لن کو اندر تو جانے دیں پھر اس کا کمال دیکھنا  ۔۔۔

پھر میں نے ان کی دونوں ٹانگوں کو اپنے کندھوں پر رکھ کر اتنا مولڈ کیا کہ جس سے ان کی چھاتیوں سے جا لگیں ۔۔۔ تھوڑا سا اور مولڈ کیا تو ٹانگیں ان کے کندھوں سے لگنے لگیں ۔۔۔ ایسا کرنے سے ان کی پھدی بڑی نمایاں ہو کر سامنے آگئ ۔۔۔۔ اور پھر میں نے ٹوپا ان کی چوت پر رکھا اور تھوڑا سا دباؤ ڈالا تو لن ان کی سلپری پھدی میں پھسلتا ہوا ۔۔ چوت کے آخری کونے  تک چلا گیا ۔۔۔۔ اور  وہ ہلکہ ہلکہ   کراہنے لگی ۔۔۔ پہلے تو میں نے بڑے آرام سے لن ان کی چوت میں اندر باہر کیا پھر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ر۔رر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ میں نے اپنی بوری طاقت سے اُوپر تلے کافی زیادہ دھکے مارے وہ اس بات کے لیئۓ مینٹلی ریڈی نہ تھیں ۔۔۔ سو اس اُفتاد پر وہ تڑپنے لگی اور لمبی لمبی سسکیاں بھرنے لگیں ۔۔

پر میں نے دھکے مارنے جاری رکھے اور وہ ۔۔۔اوئ ۔ی۔ی۔ی۔۔۔ ز۔ز۔ز۔ز۔زز۔۔ کرتے ہوے سر کو دائیں بائیں مارنے لگیں ۔۔۔ پھر میں نے دھکوں کی رفتار مزید بڑھا دی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اچانک وہ تڑپ کر اُٹھی اور مجھ سے لپٹ گئیں ۔۔۔ اور مجھے بے تحاشہ چومنے لگی اور بولی ۔۔۔۔۔ ہاں ایسے ۔۔۔ ہی ۔۔   ایسے ہی ۔۔۔ چودو گے نا میری جان تو مزہ آۓ گا اور اس رنڈی کی چوت ٹھنڈی ہوگی ۔۔۔ شاباش ۔۔۔ میری جان ۔۔ شاباش ۔۔ اور زور سے دھکے مارو ۔۔۔۔۔ تو میری پھدی کو ٹھنڈ پڑے گی ۔۔۔۔ یہ کہہ کر وہ دوبارہ لیٹ گئ اور اپنی ٹانگیں اور خود ہی اپنی ٹانگیں اپنے کندھوں کے پاس لے گئ  اور مٰن نے جلدی سے تانگوں کا سارا وزن اپنے کندھوں پر منتقل کیا اور لن ان کی گیی چوت میں ڈال کر  دوبارہ  زور و شور سے دھکے مارنے لگا  ۔۔۔ میرے ہر دھکے پر وہ پہلے سے زیادہ  اونچی آواز میں   سسکیاں لینے لگتی ۔۔۔